تو جناب ھم ہین لفنگے۔ یہ میں خود نہیں کہتا، بڑے کہتے ہیں۔ ہاں جی ! بڑے۔ بڑوں کا تو سب کو پتا ہی ہو گا کہ ان کو پیشین گوئیاں کرنے کی عادت یا شوق ہوتا ہے جس کی تصدیق ہم نہیں کر سکے کہ عادت ہے یا شوق۔۔۔

تو جناب لفنگے کو بلاگ ( ڈائری ( کی ضرورت کا ہے کو پیش آ گئی؟ کیوں ہم اپنے خیالات کا اظہار کیوں نہیں کر سکتے جب ابن انشا کھلم کھلا لمبی سی آوارہ گرد کی ڈائری لکھ سکتے ہیں تو ہم پر کوئی اعتراض کا ہے کو؟

ویسے بھی ھمارے صدر، جنابِ مشرف

معا فی چاہتا ہوں لفنگا جو ہوا، میں اب جناب جنرل پرویز مشرف صاحب لکھنے سے تو رہا

نے اظہار رائے کی کھلی چھٹی دے رکھی ہے۔ اور لفنگے تو ویسے بھی کچھ نہیں بلکہ بھت منہ پھٹ ہوتے ہیں۔

اگر بد تمیز بلاگ لکھ سکتا ہے تو لفنگے کی قلم کون روکے؟ لفنگے کی زبان کون پکڑے، حالانکہ بیسیوں بار زبان گدی سے کھنچوانے کی دھمکی سن رکھی ہے بڑوں سے ہم نے۔۔۔۔۔۔۔

 

Advertisements