Tags

وکیلوں کی کامیاب تحریک کے بعد سے مجھ میں کچھ ابال سے اٹھتے رہتے ہیں کہ پاکستان کے کچھ اور نظام بھی انقلاب چاہتے ہیں.
میری خواہش رہتی ہے کہ اگر عدل عمر رض میسر ہونے کو ہے تو زکوٰۃ کا نظام بھی تحریکیں چلا کر نافز کرواوایا جائے. انشااللہ پھر ہمیں کسی ٹیکس کی ضرورت نہیں رہے گی. پر یہ تب ہی ہو سکتا ہے جب موجودہ نام نہاد زکوٰۃ کے نظام کو اپنی اصل پر نافز کیا جائے-
اسلام کا تو یہاں کسی کو شوق باقی نہیں رہا. معیشت کی باتیں کرتے ہیں.
معیشت اس طرح ہی درست ہو سکتی ہے.
اقوام متحدہ کی نام نہاد غربت کی لکیر کا نام و نشان مٹ سکتا ہے.

Advertisements